Breaking News
Home / خبریں / پاک انڈیا / 20سے زائد نہتے کشمیریوں کو شہید کئے جانے کیخلاف چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میں زبردست احتجاجی مظاہرے
20سے زائد نہتے کشمیریوں کو شہید کئے جانے کیخلاف چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میں زبردست احتجاجی مظاہرے

20سے زائد نہتے کشمیریوں کو شہید کئے جانے کیخلاف چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میں زبردست احتجاجی مظاہرے

لاہور(3April )
جموں کشمیر موومنٹ کے زیر اہتمام مقبوضہ کشمیر میں 20سے زائد نہتے کشمیریوں کو
شہید کئے جانے کیخلاف چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میں زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور ریلیاں نکالی گئیں۔ صوبائی دارالحکومت لاہور کی طرح گوجرانوالہ،فیصل آباد،راولپنڈی، ملتان، کراچی، حیدرآباد، کوئٹہ، پشاور، سیالکوٹ، جہلم، وہاڑی اور دیگر شہروں میں ہونےو الے مظاہروں اور ریلیوں میں طلبائ، وکلائ، تاجروں اور سول سوسائٹی سمیت دیگر شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ سب سے بڑا مظاہرہ لاہور میں پریس کلب کے باہر ہوا جس میں جموں کشمیر موومنٹ سمیت مختلف مذہبی و سیاسی جماعتوں کے کارکنان اورشہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔شرکاءنے ہاتھوں میں کتبے ،بینرزاور پاکستانی پرچم اٹھا رکھے تھے جن پر مظلوم کشمیریوں کے حق میں اور بھارت سرکار اور فوج کیخلاف تحریریں درج تھیں۔مظاہروں اور ریلیوں کے اختتام پر کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔ مظاہرین کی طرف سے کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ‘ سید علی گیلانی، حافظ محمد سعید قدم بڑھاﺅ ہم تمہارے ساتھ ہیں اور کشمیر بنے گا پاکستان جیسے نعرے لگائے جاتے رہے۔مظاہرہ میں سکولوں کے ننھے بچوں نے بھی شرکت کی جنہوںنے اپنے چہروں پر برہان وانی کی تصاویر لگا رکھی تھیں۔ احتجاجی مظاہرہ سے جموں کشمیر موومنٹ کے مرکزی رہنما ابوالہاشم ربانی، سراج الدین ثاقب، احسان الحق شہباز، مولاناادریس فاروقی،حافظ عثمان شفیق، میاں محمود، حافظ مسعود الرحمن ، محمد اقبال ودیگر نے خطاب کیا۔ جموں کشمیر موومنٹ کے مرکزی رہنما ابوالہاشم ربانی نے کہاکہ ہم مظلوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں۔ جہاں ان کا پسینہ گرے گا وہاں ہمارا خون گرے گا۔ پاکستانی حکمران محض چندایک بیانا ت پر گزارہ نہ کریں کشمیریوں کی صحیح معنوں میں مدد کی جائے۔کشمیری پاکستانی پرچم لہراتے ہوئے اپنے سینوں پر گولیاں کھا رہے ہیں۔ اگر بھارتی فوجی وہاں اپنا ترنگا لہرا سکتے ہیں تو انہیں بھی پاکستانی پرچم لہرانے کا حق ہے۔ ہر پاکستانی کا دل کشمیریوں کے ساتھ دھڑکتا ہے۔انہوںنے کہاکہ غاصب بھارت سے تعلقات ختم کئے جائیں۔ کشمیری پاکستان کی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں۔انڈیا پاکستانی دریاﺅں پر ڈیم بنا کر پاکستان کو جنگ لڑے بغیر فتح کرنے کے خواب دیکھ رہا ہے۔ پاکستان ملی لیبر فیڈریشن کے صدر سراج الدین ثاقب نے کہاکہ انڈیا طویل عرصہ سے کشمیرمیں ریاستی دہشت گردی کا ارتکاب کر رہا ہے۔ حکمران کشمیریوں کی نسل کشی پر خاموش کیوں ہیں؟۔مظلوم کشمیریوں کی مددوحمایت میں کسی صورت پیچھے نہیں رہنا چاہیے۔ پاکستان ریلوے ورکرز یونین کے صدر سرفراز خاں نے کہاکہ کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ان کا حق خودارادیت دیا جائے۔ احسان الحق شہباز نے کہاکہ بھارت اسرائیلی ماہرین کے تعاون سے نہتے کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہا ہے۔ پیلٹ گن کے چھرے برساکر ان کی آنکھوں کی بینائی چھینی جارہی ہے۔حافظ عثمان شفیق ، میاں محمود، حافظ مسعود الرحمن ، محمد اقبال ودیگر نے کہاکہ کشمیریوں کیلئے ہمارے خون کا آخری قطرہ بھی حاضر ہے۔ مظلوم کشمیری پاکستانی پرچموں میںلپیٹ کر اپنے شہداءکی تدفین کر رہے ہیں۔ مشکل کی اس گھڑی میں کشمیری بھائیوں کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے۔ اس موقع پر ہزاروں افراد کی جانب سے کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ کے نعرے لگائے جاتے رہے۔ جموں کشمیر موومنٹ کے زیر اہتمام گوجرانوالہ میں پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس سے جموں کشمیر موومنٹ کے رہنما اکرم ربانی، حافظ شہزاد، میاں عادل ودیگر نے خطاب کیا۔ فیصل آباد میں جموں کشمیر موومنٹ کے تحت ضلع کونسل چوک میں احتجاجی مظاہرہ سے شیخ فیاض احمد، ثاقب مجید، بصیر احمد، امتیاز قصوری و دیگر نے خطاب کیا۔اس موقع پر کشمیری شہداءکی غائبانہ نمازجنازہ بھی ادا کی گئی۔اسلام آباد میں پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ سے جموں کشمیر موومنٹ کے رہنما شفیق الرحمن و دیگر نے خطاب کیا۔ راولپنڈی میں مریڑ چوک سے لیاقت باغ تک احتجاجی ریلی نکالی گئی جس کی قیادت مولانا عبدالرحمن نے کی۔شرکاءکی طرف سے بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔ پشاور میں پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ سے مفتی محمد قاسم، انعام اللہ، حافظ عارف اللہ، مطیع الرحمن ودیگر نے خطاب کیا۔ اس موقع پر مفتی محمد قاسم نے کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ پڑھائی جس میں شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ جموں کشمیر موومنٹ کے تحت ملتان، کوئٹہ اور کراچی میں پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی۔ اسی طرح وہاڑی، ننکانہ، سیالکوٹ، جہلم، اوکاڑہ، ساہیوال، بہاولپور،ڈی جی خاں، قصور،مظفر آباد، باغ، کوٹلی آزاد کشمیر و دیگر علاقوںمیں بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور ریلیاں نکالی گئیں جن میں ہزاروں کشمیریوںنے شرکت کی۔

About Editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*