Breaking News
Home / خبریں / پاک انڈیا / بھارتی فوج کے مسافر بس پرراکٹ حملے میں 10 افراد شہید، حافظ سعید کا شدید ردعمل
بھارتی فوج کے مسافر بس پرراکٹ حملے میں 10 افراد شہید، حافظ سعید کا شدید ردعمل

بھارتی فوج کے مسافر بس پرراکٹ حملے میں 10 افراد شہید، حافظ سعید کا شدید ردعمل

مودی سرکار جنگی جنون میں اس قدراندھی ہوگئی ہے کہ اب اس نے مقامی آبادی کے علاوہ مسافربسوں کو بھی نشانہ بنانا شروع کردیا ہے جہاں بھارتی فوج نے وادی نیلم میں مسافربس کو نشانہ بنایا جس میں 10 افراد شہید جب کہ 10 زخمی ہوگئے ہیں۔

 بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول کے مختلف سیکٹرز پر شہری آبادی کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ وادی نیلم کے علاقے لوات میں بھارتی فورسز کی جانب سے ایک مسافر کوچ پر راکٹ داغا گیا جس کے نتیجے میں10 افراد شہید جب کہ 10 زخمی ہوگئے ہیں۔

ایس ایس پی نیلم پولیس کے مطابق اس کے علاوہ بھارتی فوج نے لالہ اور راوٹہ کے قریب بھی گولہ باری کی ہے۔ واقعے کے بعد وادی میں تعلیمی ادارے غیرمعینہ مدت کے لیے بند کردیئے گئے ہیں۔

وادی نیلم میں بھارت کی بزدلانہ کارروائی کے حوالے سے اسپیکرقانون سازاسمبلی شاہ غلام قادرنے مظفرآباد میں پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ مسافر وین کو راکٹ اور چھوٹے ہتھیاروں سے نشانہ بنایا گیا، بس پر گولہ گرنے سے 10 مسافر شہید اور10 زخمی ہوئے ہیں، شہید اورزخمیوں کو مختلف اسپتالوں میں منتقل کیا جارہا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ اطلاعات ’’آئی ایس پی آر‘‘ نے واقعے میں 7 افراد کی شہادت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی فوج نے زخمیوں کو لے جانے والی ایک ایمبولینس کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

وزیراعظم آزاد کشمیرراجا فاروق حیدر نے بھارتی فوج کی جانب سے مسافربس کو نشانہ بنانےکی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی فوج معصوم شہریوں کونشانہ بنارہی ہے، مسافربس کونشانہ بنانا بھارتی فوج کی دہشتگردی کا کھلا ثبوت ہے، عالمی برادری بھارتی فوج کی جارحیت کانوٹس لے۔

دوسری جانب لائن آف کنٹرول کے مختلف سیکٹرزپربھی بلااشتعال گولہ باری کا سلسلہ جاری ہے, کیرل سیکٹر میں ایک مکان پرگولہ لگنے سے ایک شخص کے شہید جب کہ پانچ افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے، اس کے علاوہ بھارتی فوج کی جانب سے داغے گئے 3 مارٹرگولے تحصیل ہیڈ کوارٹراسپتال تتہ پانی کے قریب گرنے سے نازیہ دخترطفیل شاہ زخمی ہوگئیں۔

آئی ایس پی آرکے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے بٹل، کریلہ، شاہ کوٹ ، باگسر، تتہ پانی سیکٹرزپربلااشتعال فائرنگ کی گئی ہے، جس میں بھارتی فوج نے مارٹرگولوں سے مقامی آبادی کو نشانہ بنایا ہے جب کہ پاک فوج بھی دشمن کو منہ توڑجواب دے رہی ہے اور دشمن کی چوکیوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے، جس کے نتیجے میں کئی اہم چوکیاں تباہ ہونے کے علاوہ بھارتی فوج کو شدید جانی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی مسلسل خلاف ورزی جاری ہے جس کے نتیجے میں اب تک خواتین اور بچوں سمیت درجنوں افراد شہید ہوچکے ہیں۔

امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے بھارتی فوج کی طرف سے وادی نیلم میں بس پر راکٹ حملہ سے 10افراد کی شہادت پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ بزدل بھارتی فوج اپنے اہلکاروں کی ہلاکت کا بدلہ نہتے شہریوں پر فائرنگ کر کے لینے کی کوشش کر رہی ہے۔ مودی سرکار کو منہ تو ڑ جواب دینے کی ضرورت ہے۔ اپنے بیان میں انہوںنے کہاکہ بھارتی فوج نے کنٹرول لائن پر غیر اعلانیہ جنگ شروع کر رکھی ہے۔ کشمیریوں کی مضبوط جدوجہد آزادی سے بوکھلا کر کبھی سرجیکل سٹرائیک کے ڈرامے کئے جاتے ہیں توکبھی شہری آبادیوں، بسوں اور ایمبولینسوں پر فائرنگ کر کے نہتے لوگوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ بزدل بھارتی اہلکار پاکستانی فوج کی جوابی فائرنگ پر مورچے چھوڑ کر بھاگتے ہیں اور پسپائی کا شکار ہو کر ایسی مذموم حرکتیں کی جارہی ہیں۔ انہوںنے کہاکہ حکومت پاکستان کو کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا مسئلہ بھرپور انداز میں اٹھانا چاہیے اور سرحدی علاقوں میں جاری اس کی دہشت گردی کو پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کرنا چاہیے۔

 

About Editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*