Breaking News
Home / خبریں / پاک انڈیا / جماعةالدعوة پاکستان کی اپیل پر کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہرے
جماعةالدعوة پاکستان کی اپیل پر کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہرے

جماعةالدعوة پاکستان کی اپیل پر کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہرے

جماعةالدعوة پاکستان کی اپیل پر کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور ریلیاں نکالی گئیں۔ ملک گیر یوم احتجاج کے دوران لاہور،سیالکوٹ،گوجرانوالہ، فیصل آباد، اسلام آباد، ملتان، کراچی، حیدر آباد ، کوئٹہ اور پشاور سمیت چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میںمظاہروں اور ریلیوںکے دوران ہزاروں افراد نے سڑکوں پر نکل کر کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کیخلاف شدید غم و غصہ کا اظہار کیا۔ اس موقع پر جگہ جگہ بھارتی جھنڈے نذر آتش کئے گئے اور انڈیا کیخلاف سخت نعرے بازی کی گئی۔صوبائی دارالحکومت لاہو رمیں سب سے بڑا مظاہرہ چوبرجی چوک میں کیا گیا۔سیالکوٹ میں جماعةالدعوة کی طرف سے بھارتی فائرنگ سے متاثرہ افراد کے اہل خانہ کیلئے لاکھوں روپے مالیت کا امدادی سامان بھی بھجوایا گیا۔ مختلف شہروں میں کنٹرول لائن بھارتی جارحیت سے شہید ہونے والے افراد کی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔ حافظ محمد سعید، عبدالرحمن مکی، مولاناا میر حمزہ،حافظ عبدالغفار روپڑی، حافظ عبدالرﺅف و دیگر نے کہاہے کہ بھارت بیرونی قوتوں کی شہ پر کنٹرول لائن پر جنگ کی آگ بھڑکا رہا ہے۔ پاکستانی قوم 1965ءکی طرح انڈیاکی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیا رہے۔شہری آبادیوں اور ٹرانسپورٹ پر فائرنگ کر کے تحریک آزادی کشمیر کو نقصان پہنچانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔احتجاجی مظاہروں اور ریلیوں کے دوران بھارتی فوج کی طرف سے کنٹرول لائن پر مسافربس ،ایمبولینس اور شہری آبادیوں پر فائرنگ کے نتیجہ میں پاکستانیوں کی شہادت کے تذکرہ پر زبردست جذباتی مناظر دیکھنے میں آئے اور شرکاءکی طرف سے بھارت سرکار کو منہ توڑ جواب دینے کا مطالبہ کیا گیا۔ مظاہروں اور ریلیوںمیں طلبائ، وکلائ، تاجروں، سول سوسائٹی اور دیگر شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے افراد کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی۔حافظ محمد سعید کی اپیل پر ملک بھر کی مساجد میں علماءکرام اور دینی جماعتوں کے قائدین کی طرف سے بھارتی دہشت گردی کو موضوع بنایا گیااور کنٹرول لائن پر ہندوستانی جارحیت کیخلاف مذمتی قراردادیں پاس کی گئیں۔ اسی طرح نماز جمعہ کے بعد ہزاروں افرادسڑکوں پر نکل آئے ‘ شہر شہر احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور ریلیاں نکالی جاتی رہیں۔صوبائی دارالحکومت لاہور میںجماعةالدعوة لاہور کے زیر اہتمام چوبرجی چوک میں ہونےو الے احتجاجی مظاہرہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر شرکاءنے ہاتھوں میں کتبے اور بینرز بھی اٹھا رکھے تھے جن پر بھارتی جارحیت کیخلاف تحریریں درج تھیں۔مظاہرہ سے جماعةالدعوة کے مرکزی رہنما حافظ عبدالرﺅف،ابوالہاشم ربانی،نعمان یحییٰ ایڈووکیٹ، صاحبزادہ میاں اشرف عاصمی ایڈووکیٹ، علی عمران شاہین ،حبیب الرحمن ودیگر نے خطاب کیا۔ مقررین نے اپنے خطابات میں کہاکہ کشمیر کی آزادی نوشتہ دیوار بن چکی ہے۔ بھارتی فوج بوکھلاہٹ کا شکار ہو کر کنٹرول لائن پر بسوں اور ایمبولینسوں پر فائرنگ کر رہی ہے۔ حکومت پاکستان کو بھارتی جارحیت سے نمٹنے کیلئے عملی اقدامات اٹھانے چاہئیں اور اس کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینا چاہیے۔ جماعةالدعوة کی طرف سے مرکز ام القریٰ حاجی پورہ روڈنزد کوٹھی سکول سیالکوٹ میں نماز جمعہ کے بڑے اجتماع کا انعقاد کیا گیاجس میں شہر اور گردونواح سے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ بعد ازاں امیر جماعةالدعوة حافظ محمد سعید نے کنٹرول لائن پر بھارتی فائرنگ سے متاثرہ خاندانوں کیلئے لاکھوں روپے مالیت کا امدادی سامان روانہ کیا جس میں سینکڑوں خاندانوں کیلئے راشن پیک، بستر، ادویات اور دیگر اشیائے ضروریہ شامل تھیں۔ جماعةالدعوة کے سربراہ حافظ محمد سعید نے نماز جمعہ کے اجتماع اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ حکومت پاکستان کو کنٹرول لائن پر بھارتی حملے روکنے کیلئے انڈیا کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینا چاہیے۔ بھارتی فوج کنٹرول لائن پر فائرنگ کر کے دنیا کو دھوکہ دینے کی کوشش کرتی ہے کہ اس تحریک کے پیچھے پاکستان ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ کشمیریوں کی تحریک ان کی اپنی ہے۔برہان وانی کی شہادت کے بعد تو اس تحریک نے بہت زیادہ قوت پکڑی ہے۔ پورے کشمیر میں پاکستانی پرچم لہرائے جارہے ہیں اور چھوٹے چھوٹے بچے بھارتی فوج پر پتھراﺅ کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ حکومت پاکستان کو چاہیے کہ وہ بھارتی پروپیگنڈا کا بھرپور انداز میں جواب دیے۔ اپنی وزارت خارجہ اور سفارتی ڈیسک کو متحرک کرے اور ہندوستان کی دہشت گردی سے دنیا کو آگاہ کرے۔ انڈیا کشمیریوں کی جدوجہد آزادی دبانے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے اور وہ اپنی اسی ناکامی کو چھپانے کیلئے کنٹرول لائن پر بسوں اور ایمبولینسوں تک کو نشانہ بنا رہا ہے۔انہوںنے کہاکہ کنٹرول لائن پر بھارتی فائرنگ سے متاثرہ سینکڑوں خاندانوں کیلئے راشن ودیگر اشیائے ضروریہ بھجوادیں۔ سیالکوٹ کی طرح دیگر شہروں سے بھی امدادی سامان بھجوائیں گے اور متاثرہ بھائیوں کی ہر ممکن مدد کریں گے۔کشمیریوں کی تحریک ان کی اپنی ہے۔ بھارت جدوجہد آزادی کو دبانے میں ناکام ہو چکا۔ کشمیر کی آزادی کو اب کوئی نہیں روک سکتا۔حافظ محمد سعید نے کہاکہ کشمیر اس وقت بہت بڑا مسئلہ ہے۔ مظلوم کشمیر ی پاکستان سے ملنا چاہتے ہیں لیکن پاکستانی حکمران غفلت کا شکار ہیں۔ میں نے وزیر اعظم نواز شریف کو خط لکھا کہ آپ ہندوﺅں سے دوستی پر مبنی پالیسیاں چھوڑ کر کشمیریوں کی مدد کیلئے کھڑے ہوجائیں اللہ تعالیٰ آپ کی مدد کرے گا اور کشمیریوں کی غاصب بھارت سے جان چھوٹ جائے گی۔ ہم یہ دعوت دیتے رہیں گے۔ ہم مظلوم کشمیریوں کی مدد فرض سمجھتے ہیں۔ اگر یہ حکومتیں اپنی ذمہ داری ادا نہیں کریں گی پھر بھی اللہ ان قربانیوں کو ضائع نہیں کرے گا اور کشمیریوں کو آزادی ضرور دے گا۔جماعةالدعوة کی طرف سے اسلام آباد کے آئی ایٹ مرکز میں بڑا احتجاجی مظاہر ہ کیا گیا جس سے دفاع پاکستان کونسل اور جماعةالدعوة کے مرکزی رہنما پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی، شفیق الرحمن اور کاشف چوہدری نے خطاب کیا۔ عبدالرحمن مکی و دیگر نے کہاکہ بھارتی فوج نے کنٹرول لائن پر غیر اعلانیہ جنگ شروع کر رکھی ہے۔ کشمیریوں کی مضبوط جدوجہد آزادی سے بوکھلا کر کبھی سرجیکل سٹرائیک کے ڈرامے کئے جاتے ہیں توکبھی شہری آبادیوں، بسوں اور ایمبولینسوں پر فائرنگ کر کے نہتے لوگوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ بزدل بھارتی اہلکار پاکستانی فوج کی جوابی فائرنگ پر مورچے چھوڑ کر بھاگتے ہیں اور پسپائی کا شکار ہو کر ایسی مذموم حرکتیں کی جارہی ہیں۔راولپنڈی میں جماعةالدعوة کی طرف سے لیاقت باغ چوک مری روڈ پر ا حتجاجی مظاہرہ سے مولانا عبدالرحمن، ابوطلحہ، پیر عبدالرحمن و دیگر نے خطاب کیا۔اس دوران شرکاءنے بھارت کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ ملتان میں جماعةالدعوة نے چوک کچہری میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیاجس میں مختلف مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر جماعةالدعوة کے مرکزی رہنما ابو معاذ عمران، میاں محمد سہیل ودیگر نے خطاب کیا۔مظاہرین نے بھارتی ترنگا بھی جلایا اور شدید نعرے بازی کی گئی۔ جماعةالدعوة کی اپیل پر ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب میں یوم احتجاج منایا گیا اور ہر شہر میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ جماعةالدعوة کی طرف سے فیصل آباد میںضلع کونسل چوک میں احتجاجی مظاہرہ سے جماعةالدعوة کے مرکزی رہنما انجینئر نوید قمر ، فیاض احمد و دیگر نے خطاب کیا۔ بعد ازاں انجینئر نوید قمر نے کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت سے شہید ہونے والے افراد کی غائبانہ نماز جنازہ بھی اد ا کی۔ کراچی سے موصولہ اطلاعات کے مطابق سفاری پارک سے پریس کلب تک ریلی نکالی گئی جس کے اختتام پر بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس سے جماعةالدعوة کراچی کے مسﺅل ڈاکٹر مزمل اقبال ہاشمی ، قاری محمد امجد، محمد عمران بھٹی، مولانا مجیب الرحمن ضامرانی ودیگرنے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بزدل بھارتی فوج اپنے اہلکاروں کی ہلاکت کا بدلہ نہتے شہریوں پر فائرنگ کر کے لینے کی کوشش کر رہی ہے۔ مودی سرکار کو منہ تو ڑ جواب دینے کی ضرورت ہے۔کراچی میں پریس کلب کے باہر کنٹرول لائن پر بھارتی فائرنگ سے شہید ہونے والے افراد کی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔ حیدر آباد میں جماعةالدعوة کی طرف سے گاڑی کھاتہ سے پریس کلب تک بڑی ریلی نکالی گئی جہاں کئے جانے والے احتجاجی مظاہرہ سے جماعةالدعوة سندھ کے مسﺅل فیصل ندیم، جماعت اسلامی حیدر آباد کے امیر حافظ طاہر مجید، جے یو آئی (س) کے امیر مولانا عبدالواحد سواتی ، خالد سیف و دیگر نے خطاب کیا۔ سندھ میں نواب شاہ، بدین، میر پور خاص اور سکھر میں بھی جماعةالدعوة کی اپیل پر احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ کوئٹہ میں پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہر ہ کیا گیا ۔ اس دوران شرکاءسے جماعةالدعوة کوئٹہ کے مسﺅل مولانا محمد اشفاق و دیگر نے خطاب کیا۔ پشاور میں جماعةالدعوة کی طرف سے فوارہ چوک صدر سے پریس کلب تک ریلی نکالی گئی جس میں شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ گوجرانوالہ میں نورا کوٹ روڈ گکھڑ سٹی میں تحریک حرمت رسول ﷺ کے کنوینر مولانا امیر حمزہ نے ہزاروں افراد کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا بھرپور جواب دیئے بغیر انڈیا مذموم حرکتوں سے بازنہیں آئے گا۔جماعةالدعوة کی اپیل پر قصور، اوکاڑہ، ساہیوال، سرگودھا، خوشاب، جہلم، گجرات، ہری پور، مانسہرہ،ایبٹ آباد، میر پور، مظفر آباد ، کوٹلی ، ڈیرہ غازی خاں، ڈیرہ اسمعیل خاں اور دیگر شہروں میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں، ریلیوں اور خطبات جمعہ کے اجتماعات سے پروفیسر ظفر اقبال، مولانا سیف اللہ خالد، قاری یعقوب شیخ، مولانا محمد یوسف طیبی ، حافظ طلحہ سعید، ابوالہاشم ربانی،مولانا غلام قادر سبحانی، مولانا بشیر احمد خاکی،قاری گلزار احمد، علی عمران شاہین و دیگر نے خطاب کیا اور کہاکہ حکومت پاکستان کو کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا مسئلہ بھرپور انداز میں اٹھانا چاہیے اور سرحدی علاقوں میں جاری اس کی دہشت گردی کو پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کرنا چاہیے۔

About Editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*