Breaking News
Home / خبریں / پاک انڈیا / انڈیا کو اپنی آٹھ لاکھ فوج جلد کشمیر سے نکالنا پڑے گی. حافظ محمد سعید
انڈیا کو اپنی آٹھ لاکھ فوج جلد کشمیر سے نکالنا پڑے گی. حافظ محمد سعید

انڈیا کو اپنی آٹھ لاکھ فوج جلد کشمیر سے نکالنا پڑے گی. حافظ محمد سعید

جماعة الدعوة پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دیے بغیر جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہو سکتا۔ مظلوم کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔ انڈیا کو اپنی آٹھ لاکھ فوج جلد کشمیر سے نکالنا پڑے گی۔بھارت کی بلوچستان کو توڑنے کی سازشیں ناکام ہوچکی ہیں۔ آج بلوچستان کے عوام پھر سے سبز ہلالی پرچم لہراتے ہوئے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگارہے ہیں ۔بیرونی قوتیں مسلمانوں کوعسکری ومعاشی لحاظ سے کمزور کرنا چاہتی ہیں ۔پاکستان، سعودی عرب ، ترکی اور دیگر ملکوں میں دہشت گردی پروان چڑھانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔13جنوری کو دھوبی گھاٹ میںبڑی کشمیر کانفرنس ہو گی۔ شہر بھر سے ہزاروں افراد شریک ہوکر مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کریں گے۔ کانفرنس میں دیگر دینی و سیاسی جماعتوں کے قائدین بھی خطاب کریںگے۔علماءکرام مسلمانوں کو متحد وبیدار کرنے اورفتنہ تکفیر کے خاتمہ کیلئے کردار اد اکریں۔ ان خےالات کا اظہارانہوں نے جماعةالدعوة فیصل آباد کے زیر اہتمام مرکز خےبر نشاط آباد مےں ایک بڑے علماءکنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کےا۔ اس موقع پر شہر بھر سے علماءکرام کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔علماءکنونوشن سے مولانا سےف اللہ خالدمرکزی رہنما جماعة الدعوة پاکستان ،فےاض احمد مسﺅل جماعة الدعوة فےصل آباد،قاری عبدالشکور ،ابوبصےراحمد،مولانا محمداسحاق ودےگر نے بھی خطاب کیا۔جماعةالدعوة کے سربراہ حافظ محمد سعید نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ اسلام دشمن ملکوں کی فوجیں اور ایجنسیاںاسلام اور مسلمانوں کے خلاف کمربستہ ہوچکی ہیں ۔مسلمانوں کو آپس میں لڑا کر انہیں کمزور کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں ۔مسلمانوں کیخلاف دہشت گردی کا پروپیگنڈا کیا جارہا ہے۔آج ہمیں امام ابن تیمیہؒ کے کردار کو سامنے رکھتے ہوئے فتنوں سے نبردآزما ہونے کی ضرورت ہے۔ علماءکرام کو مساجد ومدارس کے ساتھ ساتھ دنیاوی معاملات میں بھی آگے آناہوگا ۔تنقید سے نکل اب ہمیں عمل کرنے کی ضرورت ہے ۔مسلمانوں میں اسلامی تعلیمات کا شعور بڑھ رہاہے ۔دنیا کا جغرافیہ تبدیل ہورہاہے اور عالم اسلام کے حکمران سورہے ہیں ۔علماءکرام کو آگے بڑھ کر دین اسلام کے نفاذ اور دنیا میں قیام امن کیلئے اپنا کردار اداکرنا ہوگا ۔انہوںنے کہاکہ مسلمانوں کے مقابلہ میں میدانوں میں شکست پر مسلم ملکوں و معاشروں میں فتنہ تکفیر پروان چڑھایا گیا اور تکفیری گروہوں کی سرپرستی کی جارہی ہے۔ مسلمانوں پر کفر کے فتوے لگا کرقتل و غارت گری کی آگ بھڑکانا اسلامی شریعت میں جائز نہیں ہے۔امام اب تیمیہ، امام احمد بن حنبل اور دیگر آئمہ کرام نے فتنوں کے خاتمہ کیلئے سنہری تاریخ رقم کی ہے۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ 13جنوری کو دھوبی گھاٹ ہونے والی کشمیر کانفرنس میں شرکت کرکے فیصل آباد کی باشعور عوام کشمیری بھائیوں سے محبت کا اظہار کرکے ثابت کرے گی کہ پاکستانی اسلام کی بنیادپر آج بھی کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں ۔انہوںنے کہاکہ بھارت طاقت و قوت کے بل بوتے پر کشمیرپر زیادہ دیر تک غاصبانہ قبضہ برقرار نہیں رکھ سکتا۔ کشمیر سے بھارت کی بےدخلی کا مطلب اکھنڈبھارت کے خواب کاچکنا چورہونا اور شام سے بشارالاسد کی بیدخلی کا مطلب اُس خطے سے عالمی طاقتوں کی شکست ہے ۔جماعةالدعوة کے مرکزی رہنما مولانا سیف اللہ خالد نے کہاکہ اس وقت اسلام پسند فلاحی ورفاہی تنظیموں کو پابندی کا سامنا کرناپڑ رہا ہے ۔ چن چن کر اسلامی تنظیموں پرپابندیاں لگ رہی ہیں ۔فلسطین ، کشمیر ،برما ،انڈونیشیااور شام وغیرہ میں فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کا فلاحی ورفاہی کام دیکھ کر بھی اقوام متحدہ اور دیگر عالمی طاقتیں اس تنظیم پر پابندیا ں لگارہی ہیں ۔ہمیں آج محلوں ، گلیوں اور شہروں کی سطح پر متحدومنظم ہونے کی ضرورت ہے۔ دشمن فرقہ واریت ،لسانیت ،صوبائیت اور مذہب کے نام پر پاکستانیوں کو تقسیم کرنے کی کوششوں میں اب بھی مصروف عمل ہے ۔ جماعة الدعوة پورے پاکستان میں سندھی ، پنجابی ،بلوچی ،پشتونوں اور دیگر زبانیں بولنے والوں کو نظریہ پاکستان کی بنیاد پر متحد کررہی ہے ۔ حافظ محمد سعید کی آواز پر سبھی پاکستانی لبیک کہہ کر پاکستان کی حفاظت میں سر گرم ہوچکے ہیں ۔ فیاض احمد مسﺅل جماعة الدعوة فیصل آباد نے کہاکہ کشمیریوں کے حوالے سے سب بلند آواز امیر جماعة الدعوة پروفیسرحافظ محمد سعید کی ہے ۔ ان کی ایک آواز پر علماءکرام کی کثیر تعداد کاآنا ظاہرکرتا ہے کہ علما ءکرام میں اسلام کا درد موجودہے ۔فیصل آباد کی غیور عوا م کشمیریوں سمیت پوری دنیاکے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ کھڑی ہے ۔امیرجماعة الدعوة کی آواز بھارت سمیت پورے عالم کفر میں سنائی دیتی ہے ۔

About Editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*