Breaking News
Home / خبریں / پاکستان / امریکہ دھمکیوں پر پاکستانی قوم سے معذرت کرے۔دفاع پاکستان کونسل
امریکہ دھمکیوں پر پاکستانی قوم سے معذرت کرے۔دفاع پاکستان کونسل

امریکہ دھمکیوں پر پاکستانی قوم سے معذرت کرے۔دفاع پاکستان کونسل

دفاع پاکستان کونسل کے قائدین نے دفاع پاکستان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ دھمکیوں پر پاکستانی قوم سے معذرت کرے۔ امریکی نائب وزیر خارجہ کو پاکستان کا دورہ کرنے سے روکا جائے۔ہم وطن عزیز کی سالمیت پر کسی قسم کا کمپرومائیز نہیں کریں گے۔نیٹو سپلائی فوری بند اور امریکی سفیر کو ملک بدر کیا جائے۔بھارت کی جانب سے پاکستانی فضائی حدود کے استعمال پر پابندی لگائی جائے۔تمام شہروں میں امریکی قونصل خانے بند کئے جائیں۔امریکہ اور بھارت پاکستان دشمنی میں ایک ہو چکے،حکومت کو اب ڈومور کی بجائے نومور کی پالیسی اپنانی چاہئے اورامریکہ سے تعلقات پر نظرثانی کی جائے۔پاکستان کا بچہ بچہ وطن عزیز کے دفاع کے لئے جانیں قربان کرنے کو تیار ہے۔اگر امریکہ نیوکلیئر پاور ہے تو پاکستان بھی نیو کلیئر پاور ہے۔اکیس کروڑ عوام افواج پاکستان کے شانہ بشانہ ملک کے دفاع میں ساتھ ہوں گے۔اب اگر کسی نے ملک کی سالمیت کے خلاف سازش کی تو قوم اسے ملک میں نہیں رہنے دے گی۔دفاع پاکستان کونسل امریکی دھمکیوں کے خلاف تحریک جاری رکھے گی۔مطالبات نہ مانے گئے تو تاریخی دھرنے دیئے جائیں گے۔پاکستان کی عوام،فوج ،سیاسی جماعتیں دفاع کے نقطے پر متحد ہیں۔ان خیالات کا اظہارحافظ عبدالرحمان مکی،سردار عتیق احمد خان،سید ظفر علی شاہ،پیر سید ہارون علی گیلانی،عبداللہ حمید گل،احمد رضا قصوری،علامہ ابتسام الہیٰ ظہیر،سید محمد یوسف شاہ،سید ضیاء اللہ شاہ بخاری،میاں محمد اسلم،علامہ محمد زوار حیدر،پیر عظمت سلطان،محمد اقبال فاروقی،محمد اجمل بلوچ،سید عبدالوحید شاہ،شفیق الرحمان،عبدالرحمان،ابو ولید و دیگر نے اسلام آباد پریس کلب کے سامنے دفاع پاکستان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔کانفرنس میں جڑواں شہروں سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔قبل ازیں مرکز قبا آئی ایٹ سے پریس کلب تک ریلی نکالی گئی جس کی قیادت دفاع پاکستان کونسل کے قائدین نے کی۔ریلی کے شرکاء میں زبردست جوش و خروش دیکھنے میں آیا،شرکاء امریکہ و انڈیا کے خلاف شدید نعرے بازی کر رہے تھے۔ریلی کے شرکاء نے پاکستانی پرچم بھی اٹھا رکھے تھے۔اس موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔جماعۃ الدعوۃ شعبہ سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے کہا کہ ہر پاکستانی غم و غصہ سے دوچار ہے جب امریکی صدر ٹرمپ نے پاکستان کو جنگ کی دھمکی دی۔ہم نے لاہور میں امریکی قونصل خانے کے سامنے دھرنا دیا۔آج اسلام آباد میں علامتی احتجاج ہے۔حکومت سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ امریکی سفیر کو دفتر خارجہ میں طلب کیا جائے ،اقوام عالم کے پروٹوکول کے مطابق امریکی رویئے پر شدید احتجاج کر کے جب تک امریکہ معذرت نہ کرے سفیر کو ملک سے نکلنے کا حکم دیا جائے۔امریکی صدر کو پاکستانی قوم سے معافی مانگنے تک سفارتخانے و قونصل خانے بند کر دینے چاہئیے۔خود مختار قومیں جو رویہ رکھتی ہیں اسلام آباد کی حکومت نے ابھی تک وہ رویہ پیش نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ امریکہ بھارت کے کندھوں پر آ رہا ہے،اسٹریجٹک پارٹنر کہا ہے۔بھارت کو افغانستان میں رول دیئے جانے کے بعد بھارتی طیاروں کے لئے پاکستانی فضائی حدود کے استعمال پر پابندی لگائی جائے۔نیٹو کی سپلائی سامان حرب و ضرب،خوراک سب بند کیا جائے۔بھارت اور افغانستان کے درمیان تجارتی راہداریاں دی جارہی ہیں قطعا بھارت اور افغانستان کے درمیان تجارتی راستے نہیں دینے چاہئے۔امریکہ نے بھارت کو اتحادی قرار دیا ،دونوں اعلانیہ دشمن ہیں۔انہوں نے کہا کہ دفتر خارجہ نے ابھی تک قومی غیرت کا مظاہرہ نہیں کیا۔امریکہ کے تمام شہروں میں قونصل خانے بند کئے جاییں۔وزیر خارجہ امریکہ کا دورہ مؤخرکرنے کی بجائے منسوخ کرنے کا اعلان کرے۔چین ،روس کا دورہ کیا جائے اور دوٹو ک امریکی دھمکی کا جواب دیا جائے۔پوری قوم افواج پاکستان کے شانہ بشانہ رہے گی۔امریکہ کی نائب وزیر خارجہ پاکستان کا دورہ کرنے والی ہیں ،اسے دورے سے منع کیا جائے ،امریکہ پہلے معذرت کرے،ملک کی سالمیت پر کوئی کمپرومائیز نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے مطالبات نہ مانے گئے اور امریکیوں سے معذرت نہ کروائی گئی تو دفاع پاکستان کونسل تاریخی دھرنے دے گی۔مسلم کانفرنس آزاد کشمیر کے صدر سابق وزیر اعظم سردار عتیق احمد خان نے کہا کہ پاکستان پر مشکل وقت نہیں آیا۔بھارت کو معلوم ہونا چاہئے ہم زندہ قوم ہیں۔پاکستان مضبوط دفاع رکھتا ہے۔پاک فوج سب سے بہادر فوج ہے۔ملک کے دفاع کے لئے پاکستانی قوم پاک فوج کے شانہ بشانہ رہے گی۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی آٹھ لاکھ فوج پانچ ہزار مجاہدین کے ساتھ گزشتہ پچیس برس سے لڑ رہی ہے اور شکست سے دوچار ہے۔بھارتی فوج کے حوصلے پست ہو چکے ہیں۔اسکے مقابلے میں پاکستان کی فوج سی پیک کی حفاظت کر رہی ہے۔روس،چین کے ساتھ مشقیں ہو رہی ہیں۔ بھارت اندر سے کھوکھلا ہو چکا ہے اسی لئے امریکا اس کو افغانستان میں رول دینا چاہتا ہے۔بھارت کی فوج پاکستان کی فوج و شہداء کے وارثین کا مقابلہ نہیں کر سکتی۔بیس کروڑ پاکستانی قوم پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہے۔پاکستان کو کمزور مت سمجھا جائے ۔بلوچستان کی علیحدگی کی باتیں پرانی ہو گئی ہیں ۔سی پیک سے پاکستان مستحکم ہو گا اور کشمیر آزاد ہو گا۔سنگھائی میں بھی پاکستان کا رول ہو گا۔اس موقع پر انہوں نے پاکستان زندہ باد ،افواج پاکستان زندہ باد،کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے لگوائے۔مسلم لیگ (ن) کے رہنما سید ظفر علی شاہ نے کہا کہ دفاع پاکستان کونسل کے اراکین کی تعداد اکیس کروڑ ہے۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی کو درست کیا جائے۔عوام کی نظر ڈالروں پر نہیں لیکن حکمران ڈالروں کے لئے خارجہ پالیسی بنا لیتے ہیں۔ملک کے مفاد میں پالیسی ترتیب دی جائے۔دنیا کی دوسری سپر پاور چین نے امریکی صدر کے بیانات کی مذمت کی۔روس نے بھی دھمکیوں کی مذمت کی اور کہا کہ پاکستان کے لئے امریکی پالیسی قابل قبول نہیں۔انہوں نے کہا کہ ستر سے اسی ہزار قربانیاں ہم نے دیں۔بچوں کے سکولوں،مساجد میں دہشت گرد ی کے واقعات ہوئے اسکے باوجود امریکہ بھارت سے دوستی کا خواہاں ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم پر امن ہے ،امن سے رہنا چاہتے ہیں لیکن جب امن کو تہ و بالا کیا جائے تو پھر پاکستانی قوم برداشت نہیں کر سکتی۔انہوں نے کہا حافظ محمد سعید کو رہا کیا جائے۔ہدیۃ الھادی پاکستان کے چیئرمین پیر سید ہارون علی گیلانی نے کہا کہ بھارت ،امریکہ واسرائیل پاکستا ن کے دشمن ہیں۔پاکستان کے تمام صوبوں میں بسنے والی قوم باحمیت ہے۔ہم نے کلمہ طیبہ کی بنیاد پر یہ ملک حاصل کیا اس ملک کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی حفاظت کرنا جانتے ہیں۔پاکستانی قو م کے دلوں میں شہادت کی آرزوہے ۔ان کی رگوں میں دوڑنے والا خون باطل قوتوں کے سامنے جھکنے نہیں ٹکرانے کے لئے تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ وقت اور تھا جب ہم مصلحت کا شکار ہو گئے تھے ۔اب وقت بدل گیا ہے کہ طیبہ کے پرچم تلے جینے والی قوم تمہیں ذلت سے ہمکنار کرے گی۔اب اگر کسی نے ملک کی سالمیت کی خلاف سازش کی تو پھر یہ قوم نہ صرف ایوانوں بلکہ ملک سے بھی نکال دے گی۔آئندہ اس ملک میں کسی غدار،ضمیر فروش کے لئے کوئی جگہ نہیں ہو گی۔ریمنڈ ڈیوس کے شاگر جلد پابند سلاسل ہوں گے اور حافظ محمد سعید جلد رہا ہوں گے۔تحریک جوانان پاکستان کے چیئرمین عبداللہ حمید گل نے کہا کہ پاکستان پر جب بھی کسی نے انگلی اٹھائی تو سب سے پہلے جماعۃ الدعوۃ میدان میں نکلی۔جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ امریکہ میدان میں شکست کھا چکا ہے اور پھر بھی فتح کی امید بھی رکھتا ہے۔شکست کا ملبہ پاکستان پر ڈالا جا رہا ہے۔طالبان کے مقابلے میں ایک لاکھ امریکی فوج،تین لاکھ افغان فوج،اربوں ڈالر لگانے کے باوجود امریکی جنگ ہار چکے۔انہوں نے کہا کہ نائن الیون کے بعد غلط پالیسیاں اپنائی گئیں ان پر نظر ثانی کی ضرورت ہے۔محب وطن جماعتوں پر پابندی لگائی گئی جن پر ملک بھر میں ایک بھی ایف آئی آر موجود نہیں۔امریکی ایماء پر مشرف نے گھٹنے ٹیکے ۔حکومت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ دوست و دشمن کی پہچان کریں ۔حافظ محمد سعید نظربند ہیں انکا جرم کشمیریوں کی مدد ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈومور کی بجائے نو مور کی پالیسی اپنانی چاہئے۔نیو کلیئر ملک کا ثبوت دیتے ہوئے نیٹو سپلائی فوری بند کرنی چاہئے۔آل پاکستان مسلم لیگ کے رہنما احمد رضا قصوری نے کہا کہ ٹرمپ کی پالیسیاں امریکہ کے لئے ہی نقصان دہ ہیں۔مسلمانوں کے اندر جذبہ جہاد موجود ہے۔سپرپاور روس کو شکست جذبہ جہاد نے دی ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کی دوستی سے لاتعلقی اختیار کریں اور مضبوط دفاعی و خارجہ پالیسی بنائیں۔جمعیت اہلحدیث کے ناظم اعلیٰ علامہ ابتسام الہیٰ ظہیر نے کہا کہ ہم آزاد ہیں اور یہ آزادی ہمیں قائداعظم ،علامہ اقبال کی قیادت میں لاکھوں قربانیوں کے بعد ملی۔پاکستان اسلام کے نام پر بننے والا واحد نظریاتی ملک ہے۔ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی سسکیوں،ریمنڈ ڈیوس کی گولیوں،قرطبہ چوک کے شہداء،گوانتا نامو کو نہیں بھولے۔ہم اعلان کرنا چاہتے ہیں کہ قر آن مجید کی بے حرمتی کرنے والے امریکہ کو سبق سکھائیں گے۔ہماری گردنیں کٹ تو سکتی ہیں مگر امریکہ کے سامنے نہیں جھک سکتیں۔انہوں نے کہا کہ ہم سابقہ غلطیوں کی تلافی کرتے ہوئے امریکہ کو بتانا چاہتے ہیں کہ ہم ڈالروں کے بھوکے نہیں ،ہم ملک کا دفاع کریں گے۔پاکستان کی آزاد ی کو مسخ کرنے کی امریکہ نے کوشش کی تو قوم سروں پر کفن پہن کر مقابلہ کرے گی۔جمعیت علماء اسلام (س) کے رہنما سید محمد یوسف شاہ نے کہا کہ ٹرمپ کی دھمکی کے بعد دفاع پاکستان کونسل نے سب سے پہلے میدان میں آکر تمام الزامات کو مسترد کیا اور امریکہ کو پیغام دیا کہ ہم پاکستان کے دفاع،سالمیت،استحکام کے لئے سب ایک ہیں اور پاک فوج کے شانہ بشانہ رہیں گے۔پاکستان کے سیاستدانوں نے جرات کے ساتھ امریکہ کی مخالفت کی وزارت خارجہ بھی جرات مندانہ موقف اختیار کرے اور امریکہ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر جواب دے۔دفاع پاکستان کونسل تحریک جاری رکھے گی۔متحدہ جمعیت اہلحدیث کے امیر سید ضیاء اللہ شاہ بخاری نے کہا کہ پاکستان کی فوج دنیا کی سب سے بہترین فوج ہے جس کا ماٹو ایمان ،تقویٰ ،جہاد فی سبیل اللہ ہے۔پاکستان کی فوج گنتی میں صرف چھ لاکھ نہیں بلکہ اکیس کروڑ پاکستانی عوام فوج کا ہی حصہ ہیں۔ہر پاکستانی فوج کے شانہ بشانہ ملک کے لئے جان قربان کرنا سعادت سمجھتا ہے۔جنرل قمر جاوید باجوہ کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جنہوں نے ہر محاذ پر دشمن کو منہ توڑ جواب دیا۔جماعت اسلامی کے نائب امیر میاں محمد اسلم نے کہا کہ امریکہ ویتنام میں اپنا انجام دیکھے۔وہ وہاں شکست خوردہ ہوا۔نیٹو نے سولہ سال افغانستان میں وسائل سمیت گزارے اور ویتنام والا انجام ہوا۔امریکہ کے مقدر میں شکست لکھی جا چکی ہے۔امریکہ کی معیشت کمزور ہو چکی ہے۔سب سے پہلے امریکہ کا نعرہ لگانے والا ٹرمپ بش کے راستے پر چل پڑا۔امریکہ جمع خاطر کھے۔پاکستان کے بیس کروڑ جراتمند عوام اپنی عزت پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔غوری غزنوی ہمارے پاس موجود ہے۔ایٹم الماری میں سجانے کے لئے نہیں بلکہ دشمن کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لئے بنایا گیا ہے۔متحدہ تحریک اسلامی کے سیکرٹری جنرل علامہ زوار حیدر ،تحریک پنجتن پاک کے رہنما پیر عظمت سلطان،انصار الامۃ کے مرکزی رہنما محمد اقبال فاروقی ،انجمن تاجران کے صدر محمد اجمل بلوچ ،سول سوسائٹی کے چیئرمین راجہ ظفر اقبال،دفاع پاکستان کونسل کے رہنماسید عبدالوحید شاہ ،جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کے مسؤل شفیق الرحمان،جماعۃ الدعوۃ راولپنڈی کے مسؤل عبدالرحمان،جماعۃ الدعوۃ ہزارہ زون کے مسؤل ابو ولیدنے کہا کہ پاکستان کے دشمنوں کو بتانا چاہتے ہیں کہ پاکستان آزاد اور ایٹمی ملک ہے۔پاکستان کابچہ بچہ وطن عزیز پر جانیں قربان کرنے کے لئے تیار ہے۔امریکہ نے پاکستان میں آنے کی غلطی کی تو اسکا یہاں قبرستان بنے گا۔پاکستان کی عوام،دینی و سیاسی جماعتیں ایک نقطے پر متحد ہیں کہ ہم دفاع پاکستان ،دفاع اسلام کے لئے ایک ہیں ۔

About Editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*